• جنوری 22, 2021

کرونا ٹیسٹ کے حوالے سے ہمارے ساتھ پیش آنے آنے والا عجیب واقعہ

کرونا ٹیسٹ
کرونا پر ہزاروں تبصرے اور تجزیئے ہیں مگر پتا اس کو ہی چلتا ہے جس پر بیتتی ہے یا جن کے پیارے کرونا کی وجہ سے رخصت ہوئے اور ایسے بھی ہیں کہ جن کے پیاروں کو زبردستی کرونا کا مریض بنا کر وارڈز میں رکھا گیا اور وہ جان کی بازی ہار گئے. میرے اپنے ساتھ واقعہ پیش آیا عید سے دو دن قبل لاہور کے ایک معروف اسپتال میں ایک معروف ڈاکٹر کے پاس اپنے بیٹے برہان کی ایکو کارڈیوگرافی کرانے گئے. جاتے ہی ڈاکٹر صاحب فرمانے لگے کہ آپ احتیاطی طور پر کرونا ٹیسٹ کروا لیں شاید وہ ایشو نہ ہو (حالانکہ بیٹے کو ایک بھی علامت نہ تھی، نہ بخار نہ کھانسی نہ کچھ اور) قبل اس کے ڈاکٹر صاحب بیٹے پر کرونا ٹیسٹ کا لیبل لگاتے میں نے کہا ڈاکٹر صاحب میں میڈیا میں ہوتا ہوں، اپنے ادارے اور چند شخصیات کا حوالہ دیا تو فوری طور پر ڈاکٹر صاحب نے یوٹرن لیا اور فرمانے لگے اوکے اوکے ایکو ہی کرتے ہیں. میرے لیے بڑا عجب معاملہ تھا. خیر ہم نے ایکو کروائی اور فوری گھر کی راہ لی.
ہمارے کئی قریبی عزیزوں کو بھی یہ مرض لاحق ہوا اور کئی قریبی دوست ایسے بھی ہیں جن کو یا ان کے اقارب کو زبردستی کرونا کا مرض بنا دیا گیا. اور اب جو مضحکہ خیز پلان لاک ڈاؤن کا کیا گیا کہ تین دن کرونا عوام کو رخصت دے گا باقی کے دن کرونا کسی کو نہیں چھوڑے گا اگر کوئی مارکیٹس میں آیا تو…..
باتیں اور سوالات تو ذہن میں بہت سارے ہیں مگر عوام الناس بہت کنفیوز ہے مگر اصل ایشو یہ نہیں ہے اصل ایشو عوام کی بےروزگاری اور کاروبار کا تباہ ہونا ہے جس کے لیے ہماری حکومت کے پاس کوئی خاص پلاننگ نہیں ہے کہ اس بحران سے کیسے نبرد آزما ہونا ہے.
محمد عبداللہ

Muhammad Abdullah

Read Previous

ٹویٹر ٹرینڈز سے کیا ہوتا ہے اور تحریکوں میں ٹرینڈز کس قدر اہمیت کے حامل ہوتے ہیں

Read Next

"مقبوضہ وادی کی موجودہ صورتحال، شہادتوں میں اضافے کی وجوہات اور ہم”

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے